بالاچ قادر
پاک وائسز، گوادر
حکومت نے گوادر بندر گاہ کے منصوبوں کو خطے کے لیے گیم چینجر قرار دے رہی ہے لیکن کیا گوادر کے شہریوں کے حالات زندگی بدلے بغیر  ایسا کرنا ممکن ہے ؟  چین پاکستان اقتصادی راہ داری کے منصوبے کے اعلان کے بعد قومی میڈیا میں گوادر  اور اس میں بسنے والوں کی مشکلات پر بہت کم بات کی گئی ہے۔ وہ گوادر جہاں ایک طرف میگا منصوبہ زور و شور سے جاری ہے تو دوسری طرف گوادر کے نوجوان کے لیے اس میں کم مواقع ہیں۔

میڈیا کی آنکھ سے اوجھل ایسے عوامی مسائل کو اب جان کلک میڈیا بحرین اور بام فلمز پروڈکشن گوادر نے موضوع فلم بنایا ہے۔  گوادر میں جاری ترقیاتی منصوبوں اور عام شہری کی زندگی پر اس کے اثرات  پر زراب کے نام سے ایک  فیچرفلم  بنائی گئی  ہے ۔

زَراب فلم کا ٹریلر گزشتہ روز جاری کیا گیا جس میں گوادر کے ایک خاندان کی زندگی اور ان کی مشکلات کی عکاسی کی گئی ہے۔خاندان میں تعلیم سے دور ایک کم سن بچے کو میکینیکل ورکشاپ  میں کام کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے جس سے ظاہر ہوتا ہے تو گوادر میں ہونے والی ترقی کا عام آدمی کی زندگی پر کچھ خاص فرق نہیں پڑا جہاں تعلیم جیسی بنیادی سہولیات سے محروم ہیں۔

فلم زراب کے کہانی ڈاکٹر جان ،شاہ نواز شاہ،جان البلوشی ،زاکر داد اور جمیل کریم نے لکھی ہے اور فلم کے ڈائیلاگ بھی جان البلوشی و دیگر نے ترتیب دیے ہیں۔

فلم کے ڈائریکٹر جان البلوشی نے پاک وائسز سے بات چیت کرتے ہوئے کہاکہ ” بڑے بڑے منصوبوں کی دھوم اپنی جگہ لیکن ہم نے کوشش کی ہے کہ دنیا کے سامنے گوادر اور اس کے باسیوں کے اصل حالات زندگی پیش کریں ۔ “
اس فلم میں بلوچی فلم انڈسٹری کے معروف فن کاروں نے اپنے فن کا جوہر دکھایا ہے جس اداکار انور خان، شاہ نوازشاہ، احسان دانش ،عاقب آصف سمیت دیگر بھی شامل ہیں۔
معروف بلوچ اداکار انور  خان نے پاک وائسز کو بتایا  کہ “انہیں فخر ہے کہ انہوں نے بلوچی زبان میں بننے والی اس فلم میں گوادر کے مقامی لوگوں کے مسائل کو اجاگر کرنے کی کوشش کی ہے۔”
فلم کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر ذاکر داد نے بتایا کہ”پہلی بار کسی بلوچی فلم میں  جدید ٹیکنالوجی کا استعمال کیا گیاجس سے
موضوع فلم کو اچھی طرح پیش کرنے میں مدد ملی ہے۔
فلم کے ٹریلر کے بعد عوام کو امید ہے کہ فلم بھی جلد ریلیز کر دی جائے گی تاہم فلم سازوں نے اس بارے میں ابھی تک حتمی تاریخ نہیں دی ہے۔
رائیٹر کے بارے میں: بالاچ قادر پاک وائسز کے لیے بطور گوادر سے بطور سٹیزن جرنلسٹ کام کرتے ہیں۔ 
تصاویر کریڈیٹ: جان کلک میڈیا بحرین اور بام فلمز پروڈکشن

LEAVE A REPLY