یلان زامرانی

کیچ (تربت) جو مکران ڈویژن کا ہیڈ کوارٹرہے،کیچ کاشمار بلوچستان کے گرم ترین علاقوں میں سے ہوتاہے جہاں گرمی کی سینٹی گریڈ50سے بھی آگے پرواز کر جاتا ہے

ایسے میں کبھی کبھار بارشیں برسنا بھی چھوڈ دیتے اور قحط سالی کاسماں رہتاہے
تربت کے سماجی نوجوانوں نے تین سال پہلے یعنی2017میں تربت میں شجرکاری مہم کاسلسلہ شروع کرنے کیلئے ایک تنظیم (لیٹس گرین تربت) قائم کی اور اپنی مدد آپ کے تحت شجرکاری مہم شروع کیا

سال 2018میں آنے والی حکومت نے بھی ملک کو سرسبز بنانے کیلئے درخت لگانے کامنصوبہ شروع کیا اور خیبرپختونخواہ سمیت بہت سے علاقوں میں شجرکاری کا آغاز کیاگیا ایسے میں کیچ کے ان نوجوانوں نے بھی اپنے جدوجہد کو مزید وسعت دیتے ہوئے اس سال میں بڑھ چڑھ کر درخت لگانے کافیصلہ کی

اس سلسلے میں اس مہم کے پہلے حصے کا افتتاحی تقریب گزشتہ روز کیچ کے عطاشاد ڈگری کالج میں منعقد کیاگیا جس میں کمشنر مکران طارق زہری نے،ڈی سی کیچ زیشان سیکندر، عطاشاد ڈگری کالج کے پرنسپل پروفیسر واحد بخش ودیگر نے حصہ لیا اس موقع پر کمشنر مکران طارق زہری نے کہاکہ درخت لگانا ہمارے علاقوں میں اشد ضروری ہے،اسی طرح ہمارے لیے یہ بھی ضروری ہے کہ ہم ان درختوں کو سنبھالیں اور انکی دیکھ بھال کریں

اس موقع پر لیٹس گرین تربت کے سرپرست اور بانی نوجوان سماجی کارکن معراج روشن کاکہناتھاکہ آج لیٹس گرین تربت اور حکومت بلوچستان اور ضلعی انتظامیہ کے تعاون سے آج کیچ کے تیس سے زائد مقامات پر بہ یک وقت تیس ہزار سے زائد درخت لگائے جائیں گے جن میں مختلف تعلیمی درسگاہیں اور مقامات سرفہرست ہیں

انہوں نے اس پر کمشنر مکران طارق زہری، ڈی سی کیچ زیشان سیکندر،اے سی تربت خالد خرم ودیگر کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہاکہ انکے تعاون پر ہم انکاشکریہ ادا کرتےہیں اور امیدہیکہ تربت کو گرین بنانے کیلئے ہمیشہ ہمارا ساتھ دیں گے اور لیٹس گرین تربت کا یہ مہم اگست سے لیکر اکتوبر تک جاری رہےگا ہم کیچ کے تمام طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والوں کابھی شکریہ ادا کرتےہیں جو ہمارا ساتھ دے رہے ہیں.

LEAVE A REPLY