ولید خان

پاک وائسز، رحیم یار خان

رحیم یار خان کے اس  امتحانی مرکز کو باڑے میں تبدیل کر دیا گیا
یہ رحیم یار خان کے ایک نواحی علاقے کے ایک سرکاری امتحانی مرکز کا منظر ہے جہاں ہر طرف بھینسیں بندھی نظر آتی ہیں۔ محکمہ تعلیم کو اپنے ہی قائم کردہ سینٹر کے بارے میں خبر نہیں کہ وہاں کیا ہو رہا ہے۔
علاقہ یونین کونسل بھٹہ واہن میں محکمہ تعلیم کا یہ امتحانی مرکز و کلسٹر سینٹر 7سال سے بھینسوں کے باڑے میں تبدیل ہو چکا ہے۔
مقامی لوگوں کے مطابق گورنمنٹ بوائز ہائر سیکنڈری امتحانی مرکز اور کلسٹر سینٹر پر بااثر افراد نے مبینہ قبضہ کررکھا ہے۔مقامی رہائشیوں نے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر بتایا کہ مقامی زمیندار ملک مسعود اور ان کے ملازمین نے سینٹر پر مبینہ قبضہ کیا ہوا ہے۔
جب سے امتحانی مرکز باڑے میں تبدیل ہوا ہے یونین کونسل بھٹہ واہن کے طلبا کو کافی مشکلات کا سامنا ہے۔
 امتحانی مرکز کے احاطے میں بھینسیں باندھ دی گئی ہیں۔ علاقہ مکینوں کا کہنا ہے کہ عرصہ سات سال سے یہ بلڈنگ ویران پڑی ہوئی ہے۔امتحانی مرکز بند ہونے کی وجہ سے بچوں کو امتحان کے لیے دور دراز کے علاقوں میں جانا پڑتا ہے۔

 

امتحانی مرکز کو باڑے کے طور پر استعمال کیا جا رہا ہے لیکن محکمہ تعلیم کے حکام کے بقول انہیں خبر نہیں ہوئی۔
دسویں جماعت کے طالب علم محمد نعیم نے پاک وائسز سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ مقامی امتحانی سینٹر بند ہونے کے باعث بورڈ کے امتحان کے سنٹر بہت دور بنائے جاتے ہیں۔ “امتحان کے دنوں میں سفر میں سارا وقت ضائع ہوتا ہے جس سے امتحان میں کارکردگی پر بھی اثر پڑتا ہے۔”

 

مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ امتحانی مرکز پر علاقے کے بااثر افراد نے مبینہ قبضہ کیا ہے۔
بھٹہ واہن کے طالب علموں کو امتحانی مرکز کے لیے تحصیل صادق آباد جانا پڑتا ہے جس سے آنے جانے میں بہت پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔
پاک وائسز نے جب چیف ایگزیکٹیو آفیسر محکمہ تعلیم مختیار حسین سے رابطہ کیا تو انہوں نے امتحانی مرکز پر مبینہ قبضے
کے بارے میں لاعلمی کا اظہار کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ”میرے علم میں نہیں لیکن اس سے متعلق میں پتہ کرتا ہوں.”
رائٹر کے بارے میں: ولید خان رحیم یار خان سے پاک وائسز کے لیے بطور سٹیزن جرنلسٹ کام کر رہے ہیں۔

LEAVE A REPLY