بالاچ قادر
پاک وائسز، گوادر
گوادر کے میر غفور چوک کی مارکیٹ  آج ویرانی کا منظر پیش کر رہی ہے۔
پانی اور بجلی بحران پر آل پارٹیز اور انجمن تاجران کی کال پر آج گوادر شہر میں مکمل شٹر ڈاؤن ہڑتال رہی ہے۔پورے شہر میں کاروباری مراکز،دفاتر ،بینک اور دکانیں بند رہی ہیں جبکہ سڑک پر ٹریفک بھی نہ ہونے کے برابر ہے۔
شہر میں شٹرڈاؤن ہڑتال کی کال گذشتہ روز انجمن تاجران اور آل پارٹیز گوادر نے پانی اور بجلی بحران پر انتظامیہ سے مذاکرات ناکام ہونے کے بعد دی تھی۔
یاد رہے کہ گوادر شہر اس وقت پانی کے شدید بحران سے گزر رہا ہے جبکہ شہر میں غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ سے لوگ الگ پریشان ہیں۔
گوادر شہر میں تمام کاروباری مراکز، دوکانیں، دفاتر اور بینک  آج کے روز بند رہے ہیں۔
 پانی اور بجلی بحران پر گذشتہ ہفتے آل پارٹیز اور شہریوں نے دو دن تک گوادر بندرگاہ کی طرف جانے والی مرکزی سڑک کو بلاک کرکے دھرنا دیا تھا جس کے بعد ضلعی انتظامیہ کی یقین دہانی پر دھرنا ختم کیا گیا تھا۔
 ضلعی انتظامیہ کی جانب سے آل پارٹیز سے 5دن کی مہلت لی گئی تھی تاکہ شہر میں پانی اور بجلی بحران کے حل کی طرف پیشرفت کی جائے لیکن آل پارٹیز کے رہنماؤں کے مطابق ضلعی انتظامیہ نے ان کے مطالبات پر کوئی پیشرفت نہیں کی جس پر ہڑتال کی کال دی گئی ہے۔
میر غفور مارکیٹ کا ایک اور منظر جہاں آج پوری مارکیٹ مکمل طور پر بند رہی ہے۔
رمضان کی مبارک مہینے میں بھی گوادر میں غیر اعلانیہ لوڈ شیڈنگ میں کوئی کمی نہیں آئی ہے۔
لوڈ شیڈنگ اور پانی بحران کے خلاف پیر کو افطار کے بعد گوادر کی قدیم آبادی اور گوادر پورٹ سے متصل علاقے شیخ عمر وارڈ اور ملاکریم بخش وارڈ کے رہائشیوں نے سڑک پر ٹائر جلا کر مظاہرہ کیا تھا۔ اس میں خواتین اور بچوں کی بڑی تعداد میں شریک تھیں۔
گوادر کی ائیر پورٹ روڈ پر ٹریفک  نہ ہونے کے برابر تھی۔آج کے روز  سڑک پر اکا دوکا گاڑیاں ہی نظر آئیں۔
دوسری جانب گوادر انتظامیہ نے پانی بحران سے نمٹنے کے لیئے ہنگامی بنیادوں پر کارواٹ ڈیسالینیشن پلانٹ اور سنگار پلانٹ کو جزوی طور پر فعال کردیا ہے۔
 انتظامیہ کی جانب سے دعویٰ کیا گیا تھا کہ ڈیسالینیشن پلانٹ سے پانی بحران پر کافی حد تک کمی آجائے گی لیکن بظاہر بحران برقرار ہے۔
رائیٹر کے بارے میں: بالاچ قادر گوادر سے پاک وائسز کے لیے بطور سٹیزن جرنلسٹ کام کر رہے ہیں۔
ایڈیٹنگ: حسن خان

LEAVE A REPLY