ظریف بلوچ
ٹیچر ایکسچینج پروگرام کے تحت تین ماہ کے لیے گوادر کی خواتین اساتذہ کا سات رکنی وفد 21فروری کو چین کے لیے گوادر سے روانہ ہوگا۔
گوادر بنا چین کے مختلف شہروں کا “سسٹر سسٹی”
گوادر: گوادر اور چین کے مختلف شہروں کے درمیان سسٹر سسٹی کے معائدہ کی تقریب: فائل فوٹو۔کریڈٹ:گوادر ڈسٹرکٹ کونسل

28فروری کو کراچی سے اسلام آباد جبکہ یکم مارچ کو وفد اسلام آباد سے عوامی جمہوریہ چین کے لیے روانہ ہوگا۔یہ پروگرام گوادر اور کراماۓ شہروں کے درمیان سسٹر سٹی کے تحت ہورہا ہے۔چین کی کمپنی چائنا اوورسیسز پورٹ ہولڈنگ کمپنی لمیٹڈ نے گوادر پورٹ کا انتظام سنبھالنےکے بعد چین کے مختلف شہروں نے گوادر کے ساتھ سسٹر سٹی کے ایم او یو پر دستخط کر دئیے

ہیں۔
گوادر ڈسٹرکٹ کونسل چئیر مین کی پاک وائسز سے گفتگو:
گوادر کے ڈسٹرکٹ کونسل چیرمین بابو گلاب نے پاک وائسز سے بات کرتے ہوئے بتایا کہ 2015 میں ڈسٹرکٹ کونسل گوادر اور کراماۓ میونسپل کمیٹی چائنا نے تعلیم اور صحت کے شعبوں میں باہمی تعاون کی یاداشت (MOU) پر دستخط کر دئیے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ اس حوالے سے دونوں شہروں کے درمیان تعاون بڑھانے پر بھی کام کیا جا رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ گزشتہ دو سالوں کے دوران 5 ڈاکٹرز اور اتنے ہی اساتذہ چین کے شہر کراماۓ سٹی میں ٹریننگ حاصل کرچکے ہیں۔
اس سال گوادر کے سات پرائیوٹ سکولوں۔بام پبلک سکول۔نیوٹاٶن گرائمر سکول۔دی اوسسز سکول۔گوادر گرائمر سکول۔بحریہ ماڈل سکول۔GDAہائر سکینڈری سکول۔اور TCFسربندن سے ایک ایک فیمیل ٹیچر کو اس پروگرام کے لئے منتخب کیا گیا ہے۔
اساتذہ کی روانگی کا شیڈول:
سات رکنی وفد کی 21 فروری کو گوادر سے روانہ ہوگا جو کہ یکم مارچ کو اسلام آباد سے چین کے لئے روانہ ہوگا جو چین کے شہر کراماۓ سٹی میں تین ماہ کی تربیت حاصل کرے گا۔
چین روانگی کے لیے گوادر سے اسلام آباد کے سفر کے لیے ضلع کونسل گوادر نے سات رکنی اساتذہ کی وفد کے اخراجات کا ذمہ لیا ہے اور ہر ٹیچر کو نوے ہزار روپے ٹرویل الاؤنس کے طور پر دیئے ہیں جبکہ چین میں اس وفد کی اخراجات کراماۓ سٹی چائنا برداشت کرے گا۔
مصنف کا تعارف: ظریف بلوچ پسنی سے پاک وائسز کے لیے بطور سٹزن جرنلسٹ رپورٹنگ کرتے ہیں۔

LEAVE A REPLY