ولید خان

پاک وائسز، رحیم یار خان

بہاول پور کے بعد اب رحیم یارخان سٹی میں پہلی بار ہیئر اسٹائلسٹ محمد دلشاد جو سنی کے نام سے مشہور ہیں نے ایڈوینچر کے شوقین نوجوانوں کے لیے فائرکٹنگ یعنی آگ سے بال بنانے کا طریقہ متعارف کرایا ہے۔
نوجوان ہمیشہ کچھ نیا چاہتے ہیں اور آنکھوں پر پٹی باندھ کے فائر کٹنگ کرنے والے حجام نے ان کی مشکل آسان کر دی ہے۔چند منٹوں میں آگ کا کھیل اور نیا ہیئر اسٹائل سیٹ۔۔
 یہی نہیں ہاتھوں میں چار چار قینچیوں سے فائر کٹنگ اور آنکھوں پر پٹی اور کٹنگ ایسی جو فائیو اسٹار سلون میں بھی  ہزاروں دے کر نہیں ہو گی۔
ہیئر ڈریسر سنی کا کہنا ہے کہ فائرکٹنگ کے لیےخاص کیمیکل اور سپرےاستعمال کرتےہیں۔ “پچھلے “14 سالوں سے روایتی کٹنگ کررہا ہوں لیکن جو مزہ فائرکٹنگ کرنے میں ہے عام ہیئر کٹ میں نہیں۔ انہوں نے مزید بتایا کہ فائرکٹنگ سے کوئی نقصان نہیں ہوتا بالوں کو نئی لک ملتی ہے۔
بالوں کی کٹنگ کے لیے آنے والے ایک نوجوان محمد تیمور کا کہنا تھا کہ “ہمیں کٹنگ کراتے ہوئے کوئی ڈرنہیں لگتا، سنی بھائی پراعتماد ہے۔”
“پہلے بال بنواتے تھے توٹائم زیادہ لگتا تھا، فائرکٹنگ میں چند منٹس لگتے ہیں اور کٹنگ کا رزلٹ بھی اعلیٰ ہوتا ہے۔”
رائیٹر کے بارے میں: ولید خان پاک وائسز کے ساتھ بطور سٹیزن جرنلسٹ رحیم یار خان سے کام کرتے ہیں۔
فوٹو کریڈیٹ: ولید خان

LEAVE A REPLY