جی آر جونیجو

تھرپارکر کی تحصیل ڈیپلو ایک بڑی آبادی وار شھر ھے پرانے زمانے میں ہے شہر تجارت کے لحاظ سے بھی مشہور تھا۔  بدقسمتی سے جب پوری دنیا ترقی کر رھی ھے کئی شہر ترقی کر راہ میں ھیں مگر یے شہر تعلقہ ھیڈ کوارٹر ھونے کے باوجود بھی ترقی نہیں کر سکا ھے لحاظہ دن بہ دن مسائل کی بیچ میں جا رھا ھے۔

یہاں پر ٹائوں چیئرمین کی اناپرستی کے باعث ترقیاتی منصوبے ابھی تک نہیں بن سکے ھے شہر کے اکثر محلے  کھنڈرات کا منظر پیش کر رھے ھیں صفائی والے گاڈیاں خراب ھو گئی ھیں شہر کا واحد تفریح گاہ حمید پبلک پارک بھی دیکھ بال بھی ھونے اور عدم توجہ کے باعث تباہ ھو گیا ھے۔
ڈرینج سسٹم ناکارہ ھونے سے ش گندہ پانی محلون کی گلیوں مین کھڑا رھتا جس کے باعث بیماریون نے بھی ڈیرے ڈال دیئے ھیں پینے کا پانی جمع کرنے کے لیئے بنایا گیا بڑا ٹینک بھی گندگی کی لپیٹ میں آ گیا ھے اور شہر باسی پانی کی سہولیت نہ ھونے کے باعث آج بھی کڑوا جر کا پانی پینے پر مجبور ھیں ۔ بدقسمتی سے شہر سے گند کچرہ اٹھانے کے لیئے کوئی خاص بندوبست نہیں ھے گندگی اٹھانے والی گاڑیوں کا بھی کوئی پتا نہیں لحاظہ ان کے کچھ حصے ایک سرکاری عمارت کے باھر خراب حالت میں موجود پڑے ھیں ایمرجنسی میں کام کرنے والی ڈیپلو  ٹاؤن کی فائر برگیڈ گاڑی بھی تباہی کا شکار ھے۔
شہر باسیوں کا کہنا ھے کہ ٹاؤن چیئرمین اور کائونسلروں کے جھگڑے کے باعث شہر بھگت رھے ھیں ان کی انا کے باعث ترقیاتی کام نہیں ھو سکے ھے اور شہریوں کے زندگی دھرے عذاب میں آ گئی ھے۔ انہوں نے مطالبہ کیا ھے کہ ھمیں پانی کی سہولیت اور اچھے ماحول میں جینے کا حق دیا جائے۔

LEAVE A REPLY