سلیمان ہاشم

پاک وائسز، گوادر

منگل کو ساز و سامان سے لدا چینی جہاز گوادر بندر گاہ پر لنگر انداز ہو گیا ہے۔ فوٹو: سلیمان ہاشم

منگل کو چین سے ایک اور بحری جہاز گودار بندر گاہ پر لنگر انداز ہو گیا ہے۔گوادر پورٹ اتھارٹی کے حکام کے مطابق چین کے اس جہاز کا نام ایسٹرن ویسٹ ہے اور جہاز گوادر پورٹ فری زون کے لئے کئی ٹن تعمیراتی مشینری اور دیگر اشیاء سے لدا ہوا ہے۔ حکام نے پاک وائسز کو بتایا کہ چند دنوں میں یہ جہاز برتھ پر لگ جائے گی اوراس کا تمام سامان اتارا جائے گا۔

گزشتہ ماہ بھی ایک چینی بحری جہاز گوادر پورٹ پر کرین ، بلڈوزر،واٹر بوزر اور دیگر مشینری اُتار چکی ہے۔ یہ تمام مشینری جو اب تک بندر گاہ پر اتاری گئی ہے یہ پورٹ اور اس سے متصل جگہوں پر استعمال ہو رہی ہے ہے۔ اس جہاز میں مشینری کے علاوہ دیگر اشیا بھی موجود ہے۔

گوادر بندر گاہ پر کام کرنے والے مقامی حکام کے مطابق چینی جہاز کا نام ایسٹرن ویسٹ ہے۔ فوٹو: سلیمان ہاشم

چین سے آنے والے کئی ٹن وزنی جہاز ایسٹرن ویسٹ کے لنگر انداز ہوتے ہی میرین سیکورٹی کی گشت بڑھ چکی ہے۔ اس کے علاوہ گزشتہ سال  15دسمبر کو چینی حکومت نے گوادر پورٹ اور اس کے سمندری حدود کو محفوظ بنانے کے لئے بحری سیکورٹی کے لئے دو گن شپ بحری جہازپاکستان نیوی کے حوالے کیے ہیں۔ حکومت پاکستان کی طرف سے چائینا کو2281ایکڑ زمین فری زون ایریا پر مشتمل دی گئی ہے۔

اس مال بردار جہاز کے ساتھ اب تک چین کے کل 5 جہاز گودار بندر گاہ پر لنگر انداز ہو چکے ہیں جن میں دیگر مشینری میں سریا لوہے کے پائپ اور اور دیگر اشیا شامل ہیں۔

چائینا حکومت کی کوشش ہے کہ وہ سی پیک کو جلد مکمل کرنے کے لئے چائینا سے زیادہ سے زیادہ تعمیراتی اشیا بحری جہازوں کے ذریعے گوادر پورٹ تک پہنچا دے۔

 رائیٹر کے بارے میں: سلیمان ہاشم گودار سے پاک وائسز کے لیے بطور سٹیزن جرنلسٹ کام کرتے ہیں۔

LEAVE A REPLY