ساجد بجیر
پاک وائسز، تھرپارکر
تھر پارکر میں غذائی قلت کے باعث آج مزید دو بچے دم توڈ گئے۔سول اسپتال مٹھی کے ذرائع نے تصدیق کی کہ اسپتال میں دریدن اور گاگن کے نومولد بچے ہلاک ہو گئے۔
محکمہ صحت کے ذرائع کے مطابق 90 سے زائد بچے مختلف سرکاری اسپتالوں اور مراکز صحت میں زیر علاج ہیں۔
سول اسپتال مٹھی میں زیر علاج زیادہ تر بچوں کا تعلق تھر کے دیہی علاقوں سے ہےجہاں صحت کی سہولیات نہ ہونے کے برابر ہیں۔
گزشتہ 4 دنوں کے دوران 8 بچے جان کی بازی ہار چکے ہیں۔
محکمہ صحت کے ذرائع کے مطابق تھر پار کر میں رواں سال غذائی قلت کے باعث ہلاک ہونے والے بچوں کی تعداد 152 ہو گئی ہے۔اسی سال اپریل میں سپریم کورٹ کے چیف جسٹس نے تھر میں بچوں کی ہلاکتوں پر سوموٹو نوٹس بھی لیا تھا۔
رائیٹر کے بارے میں: ساجد بجیر  تھرپارکر سے پاک وائسز کے لیے بطور سٹیزن جرنلسٹ کام کر رہے ہیں۔
 

LEAVE A REPLY